کن حالات میں مباشرت سے پرہیز کرنا چاہیئے

کن حالات میں مباشرت سے پرہیز کرنا چاہیئے

مندرجہ ذیل اوقات میں مباشرت سے پرہیز کرنا چاہیئے

دن کے وقت مباشرت سے پرہیز کرنا چاہیئے کیونکہ اس وقت مباشرت کرنے سے اگر حمل ٹھہر چائے تو اولاد بدصورت اور بدچلن پیدا ھو گی

کھانے کے فورا معد یا خالی پیٹ مباشرت نہیں کرنی چاہیئے کیونکہ اس سے دونوں فریق پر برا اثر پڑتا ہے اور محتلف قسم کی بیماریاں لگ جاتی ہیں

بخار یا نزلہ و زکام کی حالت میں مباشرت نہیں کرنی چاہیئے کیونکہ اگر اس حالت میں حمل قرار پا گیا تو اولاد میں دائمی نزلہ زکام ھونے کا قوی امکان ہے

غموغصہ یا خوف وغیرہ کی حالت میں مباشرت نہیں کرنی چاہیئے

زیادہ گرمی کے موسم میں مباشرت سے پرہیز کرنا چاہیئے

دوران حیض مباشرت نہیں کرنی چاہیئے کیونکہ اس سے مہلک قسم کی بیماری پیدا ھونے کا امکان ہوتا ہے

حمل کے دوران مباشرت سے پرہیز کرنا چاہیئے لیکن اگر اس دوران فطری طور پر خواہش پیدا ھو تو مباشرت کے لیے ایسا طریقہ اپنانا چاہیئے جس سے عورت کے پیٹ پر زیادہ بوجھ نہ پڑے اور وہ تکلیف محسوس نہ کرے

Customer Service (Pakistan) +92-313-99-77-999
Helpline +92–30-40-50-60-70
Customer Service (UAE) +971-5095-45517
E-Mail [email protected]
Dr. Hakeem Muhammad Irfan Skype ID alshifa.herbal

3 thoughts on “کن حالات میں مباشرت سے پرہیز کرنا چاہیئے

  1. AOA
    janab mai aik ajeeb bemari mai mubtala hoon peshab (urine) sai pehly mada nikalta hai (Mazi) aur jab kabhi kabaz hoti hai to mani be bohat nikalti hai.. jis ki waja sai mery patho aur joints sameth pory jism mai takat nahi rahi aur meri umer (age) abhi 26 saal hai. mai bohat pareshan hoon koi tareka -e- ilaj bataiay

  2. I’m extremely inspired along with your writing talents and also with the format in your weblog. Is that this a paid subject or did you modify it your self? Either way stay up the nice high quality writing, it is rare to look a nice weblog like this one today..

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *