چنبل
یہ ایک جلدی مرض ہے ۔ جس میں جلد پر سوزش ہو کر جلد کی سطح صرف ( سیپ ) کی اوپر والی سطح کی طرح کھردری ہو جاتی ہے اور کبھی اس پر مچھلی کی طرح جلد کے خشک چھلکے اترتے ہیں ۔ آغاز مرض میں چھوٹے چھوٹے سرخ گلابی دانے بنتے ہیں ان پر چھلکوں کی تہہ جم جاتی ہے ۔ کھرچنے سے چھلکے دور ہو جاتے ہیں کچھ وقت کے بعد پھر بڑھنے لگتے ہیں اور پھر یہ سوزش بڑھ کر کافی جگہ اپنی لپیٹ میں لے لیتی ہے ۔ اگر کوئی مناسب تدبیر نہ کی جائے تو متاثرہ مقام کی جگہ بڑھتی جاتی ہے ۔ یہ بڑا ضدی مرض ہے اور جلدی سے نہیں جاتا ۔ سخت تکلیف دہ ہوتا ہے اس کا زیادہ زور کہنیوں ، بازوؤں ، گھٹنوں ، ٹانگوں ، کھوپڑی اور کمر کے حصوں پر ہوتا ہے ۔

زبان طب میں اسے چنبل کا نام دیا گیا ہے جبکہ اردو میں اپرس صدفہ جبکہ انگریزی میں سورائس ( Psoriasis ) کہتے ہیں ۔ اس کے لیے ایک انگریزی اصطلاح ایگزیما ( Eezema ) بھی مشتمل ہے اور آج کل زیادہ اسی نام سے پکارا جاتا ہے ۔ طب مشرقی کے مطابق اس کا شمار سوداوی امراض میں ہوتا ہے اس میں زہریلا بدنی مواد جسم کے کسی حصے پر جلد کو متاثر کرتا ہے ۔ یہ بڑا تکلیف دہ مرض ہے جو جلد کی ماہیت پر کچھ اثر انداز ہوتا ہے اور بڑی ناگواری کا احساس پیدا کر دیتا ہے ۔ تجربات شاھد ہیں کہ یہ بچوں اور بوڑھوں میں کم ہوتا ہے ۔ البتہ نوجوانوں میں جن کی عمر 20 سال سے لے کر چالیس سال کی عمر میں زیادہ ہوتا ہے اور زیادہ تر لوگوں کو ٹانگوں اور بازوؤں پر دیکھنے میں آیا ہے ۔ کھوپڑی پر گاہے ہوتا ہے مگر اکثر بفہ ( ڈینڈروف ) سمجھ لیا جاتا ہے اس لیے فرق ضروری ہے ۔

اسباب :
طب مشرقی کے نزدیک خلط سودا کے سبب ہوتا ہے ۔ یعنی جسم بعض سوداوی مادے خارج کرنے میں ناکام رہتا ہے تو مادے اس مرض کا سبب بن جاتے ہیں اور دانوں کی صورت نمودار ہونے کی کوشش کرتے ہیں ۔ اس کے علاوہ نظام ہضم کی خرابی ، میلا کچیلا رہنا ، قبض ، شراب نوشی ، اور جذباتی تناؤ بھی عوامل ہو سکتے ہیں ۔ ذہنی دباؤ ( ڈیپریشن ) سے بھی جلد کی سرگرمی بڑھ کر یہ مرض ہو سکتا ہے ۔ گرم ممالک کی نسبت مغرب میں یہ مرض زیادہ ہے ۔ ماہرین جدید کی رائے میں اس مرض کا سبب وائرس ہے ۔

علاج :
تین ماہ تک مسلسل استعمال سے کافی لوگوں کو فائدہ ہوا ہے ۔

رسوت چاکسو نرکچور کتھ سفید ( تمام 3 گرام )
چاروں اجزا پیس کر آدھے گلاس پانی میں جوش دے کر چھان کر صبح نہار منہ پی لیا جائے ۔ سہ پہر کو قرص رسوت اعدد تازہ پانی لے کر کھا لیں اور شربت عشبہ خاص دو چمچے پی لیں ۔

نسخہ نمبر 2: گل منڈی دس عدد ، چرائتہ چھ گرام ۔
آدھے گلاس پانی میں جوش دے کر چھان کر شربت عناب دو چمچے ملا کر صبح نہار منہ پی لیں ۔ مغرب میں یہ مرض بہت عام ہے وہاں بڑی تحقیق جاری ہے ، مگر ہنوز اس کا شافی علاج ان کے پاس نہیں ہے ۔

Customer Service (Pakistan) +92-313-99-77-999
Helpline+92–30-40-50-60-70
Customer Service (UAE)+971-5095-45517
E-Mailinfo@alshifaherbal.com
Dr. Hakeem Muhammad Irfan Skype IDalshifa.herbal

One thought on “چنبل کا دیسی طریقہ علاج

  1. AOA.
    is this desease also known as Lichen Planus. If not then what is the difference and cure for the later…. Thanks

Leave a Reply



  • error: Content is protected !!