Skip to content
AL-Shifa Natural Herbal Laboratories Pvt. Ltd.

الشفاء نیچرل ہربل فارما

اورجب میں بیمار ہوتا ہوں تو وہ ( اللہ ) مجھے شفا دیتا ہے
Helpline: 0092-30-40-50-60-70, Mob: 0092-313-99-77-999

ROYAL-X

ROYAL-X

AL shifa Natural Herbal Laboratories (Pvt) Ltd
ROYAL – X COURSE ،The Best Man Can Do
کیا آپ مرد ا نہ کمزوری کا شکار ہیں ؟
کیا آپ قبل از وقت انزل کا شکار ہیں ؟
کیا آپ اپنی بیوی کو مطمئن نہیں کرپا تے ؟
کیا آپکی ازواجی زندگی اس مسلے کی وجہ سے تباھ ہو چکی ہے ؟
کیا آپ ٹائمنگ گولیاں استمال کر کر کے تھک چکے ہیں ؟
کیا آپ بچپن میں مشت زنی کی وجہ سے اپنی طاقت کھو چکے ہیں یا بہت زیادہ مشت زنی کی وجہ سے آپکا عضو خاص سکڑ گیا ہے ؟ تو اب اس مسلے کا مکمل حل پائیں
سب سے زیادہ فروخت ہونے والی میڈیسن ، رائل ایکس کیپسول ،اب پاکستان اور باہر مملک میں بھی حاصل کریں
Yes ROYAL-X Now Available in Pakistan
رائل ایکس کیپسول کے استمعال سے اپنی کھوئی ہوئی طاقت واپس حاصل کریں اور پھرسے مکمل مرد بن جایئں
رائل ایکس کیپسول، کسی بھی قسم کے سائڈ ا فیکٹ سے پاک اورخالص جڑی بوٹیوں سے تیار ہے
رائل ایکس کیپسول کیا ہے ؟ اس کے کیا فائدے ہیں ؟ اور یہ کیسے کام کرتی ہے؟
اس کو استمال کا طریقہ اور فوائد کیا ہیں ؟
رائل ایکس کیپسول پاکستان ،اور باہر ممالک میں حاصل کرنے کے لیے ابھی رابطہ کریں اور گھر بیٹھے صرف ایک فون کال پر رائل ایکس کیپسول اپنے مطلوبہ پتے پر حاصل کریں
الشفاء نیچرل ہربل لیبارٹریز پرٍائیویٹ لیمیٹد پاکستان، کی دور حاضر میں نئ ریسرچ اور جدید تحقیق
ROYAL-X،نسخہ،رائل ایکس کیپسول
بیش بہا قیمتی جڑی بوٹیوں کامرکب ہے
تمام مردانہ جنسی امراض کا مکمل اور مستقل علاج ہے
نسخہ،رائل ایکس،ROYAL-X،عرصہ پانچ سال تجربہ اور ریسرچ میں بغیر کسی سائیڈایفیکٹ کے سوفیصد بہترین نتائج ملے تمام مضر اثرات سے پاک ہے بلا خوف وخطراستعمال کرسکتے ہیں
ROYAL-X،نسخہ،رائل ایکس کیپسول
ان تمام امراض میں مستقل علاج کی حیثیت رکھتا ہے
جوانی کی غلط کاریاں ،یعنی کہ کثرت مشت زنی کی وجہ سے
عضو خاص کا کمزور ہونا عضوخاص کا آگے یاں پیچھے سےپتلا موٹا
ہونا عضو خاص کی رگوں کا اُبھرنا مباشرت کے وقت شہوت کا نہ ہونا
یاں بہت کم ہونا ذکاوت حس یعنی کہ جنسی خیال آتے ہی منی مذی کا خود بخود اخراج ہوجانا یاں کثرت احتلام کا ہونا پیشاب کے بعد منی کے قطروں کا آنا ،یعنی کہ جریان،اور پیشاب کا بار بار آنا اور دوران مباشرت بمشکل ایک منٹ یاں دخول کرتے ہی فارغ ہوجانا اورمباشرت کے بعد جسمانی کمزوری اورسستی کا پیدا ہونا اولاد کے جراثیم نہ ہونا یاں کم ہونا منی کا پتلا پن چہرے پر بے رونقی جوانی میں ہی بوڑھا لگنا یاں اپنے آپ کو محسوس کرنا،کھانا پینا ٹھیک طریقے سے ہضم نہ ہونا اور جسم میں خون کی کمی کا ہونا اور شادی سے ڈرنا گھبرانا اورجنسی کمزوری ,ان تمام امراض میں نسخہ،رائل ایکس کیپسول،کا استعمال بہترین ہے اور سوفیصد مجرب علاج ہے اس کا استعمال ان تمام امراض کو مستقل اور ہمیشہ کے لیے ختم کرتا ہے ختم شدہ قوت مردانہ کو قدرتی طریقے سے بحال کر دیتا ہے ،رائل ایکس کیپسول
ایک ماہ کا مکمل اور مستقل علاج ہے ایک ماہ استعمال کرنے کے بعد اللہ کے فضل سے دوبارہ کبھی بھی جنسی امراض کے حوالے سےمیڈیسن کی ضرورت نہیں پیش آتی مریض مستقل ہمیشہ کے لیےصحت یاب ہوجاتا ہے
نوٹ
ROYAL-X،نسخہ،رائل ایکس کیپسول
دل کے مریض بلڈ پریشر کے مریض شوگر کے مریض اور جوڑوں کے درد کے مریض بلا خوف استعمال کر سکتے ہیں کسی قسم کا نقصان نہیں دیتا بلکہ ان امراض کو بھی درست کرنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے
ROYAL-X،نسخہ،رائل ایکس کیپسول
کسی بھی لیبارٹری سے چیک کراو سکتے ہیں اس میں کسی قسم کا سٹرائیڈ یاں کیمیکل نہیں استعمال کیا گیاسوفیصد جڑی بوٹیوں کا مرکب ہے
Order For Help Line:+92-30-40-50-60-70
Skype, alshifa.herbal

بے اولادوں کے لئے

بے اولاد،خواتین کے لئے بہترین نسخہ
نسخہ الشفاء۔,کستوری خالص 3 گرام، زعفران 3 گرام، جدوار خطائی 3 گرام،کشتہ مرجان ،قرشی
یاں ہمدرد کا بنا ہوا لے لیں، کشتہ مرجان 3 گرام مروارید،یعنی کہ سچے موتی 2 گرام،سپاری 50
گرام سپاری 50 گرام، ورق نقرہ 2،گرام،،یعنی کہ چاندی کے ورق ، ورق طلاء2گرام ،یعنی کہ 
سونے کے ورق2گرام ،چھوٹی الائچی کا دانہ  2گرام سب کو ملا کراچھی طرح  کھرل میں سفوف بنا لیں
ترکیب استعمال ۔2 گرام صبح نہار منہ ایک سے دو گلاس نیم گرم دودھ کیساتھ استعمال کریں
فوائد ۔اعلٰی درجہ کا معین حمل نسخہ ہے اس کے استعمال سے انشاء اللہ حمل قرار پاتا ہے
نوٹ؟ یہ نسخہ خواتین کے لیے ہے اور مکمل ختم ہونے تک مسلسل استعمال کریں

Mango-Pakistani

آم کے فوائد اور خواص

اردو نام آم ،عربی نام انبنج ،فارسی نام انبہ،گجراتی نام آبنو ، انگریزی نام مینگو مشہور عام پھل ہے پاکستان میں بکثرت ہوتا ہے اس کی گٹھلی کی گری میں قریباََ دس فیصد ٹینک ایسڈ پایا جاتا ہے
رنگ ۔سبز، سرخ ، اور زرد رنگوں کا ہوتا ہے ۔
ذائقہ ۔خام ترش، پختہ میٹھا ، چاشنی دار اور خوشبودار۔
مزاج گرم تر
فوائد۔معدہ ، آنتوں ،مشانہ کو تقویت دیتا ہے ۔
اس کے خشک پھولوں کا سفوف جریان کے لئے اکسیر ہے ۔
آم کا شمار برصغیر کے بہترین پھلوں میں ہوتا ہے ، اس لیے یہ پھلوں کا بادشاہ کہلاتا ہے۔ اسے برصغیر کا بچہ بچہ جانتا ہے۔ آم اپنے ذائقے ، تاثیر، رنگ اور صحت بخشی کے لحاظ سے تمام پھلوں سے منفرد ہے اور چوں کہ خوب کاشت ہوتا ہے ، اس لیے یہ سستا اور سہل الحصول بھی ہے۔ اس کی سینکڑوں اقسام ہیں۔ برصغیر کو آم کا گھر بھی کہتے ہیں۔ فرانسیسی مورخ ڈی کنڈوے کے مطابق برصغیر میں آم چار ہزار سال قبل بھی کاشت کیا جاتا تھا۔ آج کل جنوبی ایشیاء کے کئی ممالک میں بھی بڑے پیمانے پر اسے کاشت کیا جاتا ہے۔

ویسے تو آم کی متعدد اقسام ہیں جن کا ذکر آگے چل کر آئے گا تاہم دو قسمیں عام ہیں۔ تخمی اور قلمی، کچا آم جس میں گٹھلی نہیں ہوتی، کیری کہلاتا ہے اور اس کا ذائقہ ترش ہوتا ہے۔ البتہ پکا ہوا آم شیریں اور کبھی کھٹ میٹھا ہوتا ہے۔ پکے ہوئے تخمی آم کا رس چوسا جاتا ہے اور قلمی کو تراش کر کھایا جاتا ہے۔ آم قلمی ہو یا تخمی بہر صورت پکا ہوا لینا چاہیے۔ یہ رسیلا ہونے کی وجہ سے پیٹ میں گرانی پیدا نہیں کرتا اور جلد جزو بدن ہوتا ہے۔ پکا ہوا رسیلا میٹھا آم اپنی تاثیر کے لحاظ سے گرم خشک ہوتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ آم کے استعمال کے بعد کچی لسی پینے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔ اس طرح آم کی گرمی اور خشکی جاتی رہتی ہے۔ جو لوگ کچی لسی (دودھ میں پانی ملا ہوا) استعمال نہیں کرتے ان کے منہ میں عام طور پر چھالے ہو جانے یا جسم پر پھوڑے پھنسیاں نکل آنے کی شکایت ہو جاتی ہے۔ آم کے بعد کچی لسی استعمال کرنے سے وزن بھی بڑھتا ہے اور تازگی آتی ہے۔ معدے ، مثانے اور گردوں کو طاقت پہنچتی ہے۔ آم کا استعمال اعضائے رئیسہ دل، دماغ اور جگر کے لئے مفید ہے۔ آم میں نشاستے دار اجزا ہوتے ہیں جن سے جسم موٹا ہوتا ہے۔ اپنے قبض کشا اثرات کے باعث اجابت با فراغت ہوتی ہے۔ اپنی مصفی خون تاثیر کے سبب چہرے کی رنگت کو نکھارتا ہے۔ ماہرین طب کی تحقیقات سے ثابت ہوتا ہے کہ آم تمام پھلوں میں سے زیادہ خصوصیات کا حامل ہے اور اس میں حیاتین “الف “اور حیاتین “ج ” تمام پھلوں سے زیادہ ہوتی ہے۔ کچا آم بھی اپنے اندر بے شمار غذائی و دوائی اثرات رکھتا ہے۔ اس کے استعمال سے بھوک لگتی ہے اور صفرا کم ہوتا ہے۔ موسمی تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے لو کے اثرات سے بچاتا ہے البتہ ایسے لوگ جن کو نزلہ، زکام اور کھانسی ہو ان کو یہ ہرگز استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ آم تمام عمر کے لوگوں کے لئے یکساں مفید ہے۔ جو بچے لاغر اور کمزور ہوں ان کے لئے تو عمدہ قدرتی ٹانک ہے۔ اسے حاملہ عورتوں کو استعمال کرنا چاہیے ، یوں بچے خوب صورت ہوں گے۔ جو مائیں اپنے بچوں کو دودھ پلاتی ہیں ، اگر آم استعمال کریں تو دودھ بڑھ جاتا ہے۔ یہ خوش ذائقہ پھل نہ صرف خون پیدا کرنے والا قدرتی ٹانک ہے بلکہ گوشت بھی بناتا ہے اور نشاستائی اجزا کے علاوہ فاسفورس، کیلشیم، فولاد، پوٹاشیم اور گلوکوز بھی رکھتا ہے۔ اسی لیے دل، دماغ اور جگر کیساتھ ساتھ سینے اور پھیپھڑوں کے لئے بھی مفید ہے البتہ آم کا استعمال خالی پیٹ نہیں کرنا چاہیے۔ بعض لوگ آم کھانے کے بعد گرانی محسوس کرتے ہیں اور طبیعت بوجھل ہو جاتی ہے۔ انہیں آم کے بعد جامن کے چند دانے استعمال کرنے چاہئیں ، جامن آم کا مصلح ہے۔
آم کی مختلف اقسام

یوں تو آم کی بے شمار اقسام سامنے آچکی ہیں مگر پاکستان میں بکثرت پیدا ہونے والی اقسام درج ذیل ہیں

دسہری

اس کی شکل لمبوتری، چھلکا خوبانی کی رنگت جیسا باریک اور گودے کے ساتھ چمٹا ہوتا ہے۔ گودا گہرا زرد، نرم، ذائقے دار اور شیریں ہوتا ہے۔

چونسا

یہ آم قدرے لمبا، چھلکا درمیانی موٹائی والا ملائم اور رنگت پیلی ہوتی ہے۔ اس کا گودا گہرا زرد، نہایت خوشبودار اور شیریں ہوتا ہے۔ اس کی گٹھلی پتلی لمبوتری، سائز بڑا اور ریشہ کم ہوتا ہے۔ اس کی ابتدا ملیح آباد (بھارت) کے قریبی قصبہ “چونسا” سے ہوئی۔

انور رٹول

اس کی شکل بیضہ نما ہوتی ہے اور سائز درمیانہ ہوتا ہے۔ چھلکا درمیانہ، چکنا اور سبزی مائل زرد ہوتا ہے۔ گودا بے ریشہ، ٹھوس، سرخی مائل زرد، نہایت شیریں ، خوشبودار اور رس درمیانہ ہوتا ہے۔ اس کی گٹھلی درمیانی، بیضوی اور نرم، ریشے سے ڈھکی ہوتی ہے۔

لنگڑا

یہ آم بیضوی لمبوترا ہوتا ہے۔ اس کا چھلکا چکنا، بے حد پتلا اور نفیس گودے کے ساتھ چمٹا ہوتا ہے۔ گودا سرخی مائل زرد، ملائم، شیریں ، رس دار ہوتا ہے۔

الماس

اس کی شکل گول بیضوی ہوتی ہے اور سائز درمیانہ، چھلکا زردی مائل سرخ، گودا خوبانی کے رنگ جیسا ملائم، شیریں اور ریشہ برائے نام ہوتا ہے۔

فجری

یہ آم بیضوی لمبوترا ہوتا ہے۔ فجری کا چھلکا زردی مائل، سطح برائے نام کھردری، چھلکا موٹا او نفیس گودے کے ساتھ لگا ہوتا ہے۔ گودا زردی مائل، سرخ، خوش ذائقہ، رس دار اور ریشہ برائے نام ہوتا ہے۔ اس کی گٹھلی لمبوتری موٹی اور ریشے دار ہوتی ہے۔

سندھڑی

آم بیضوی اور لمبوترا ہوتا ہے۔ اس کا سائز بڑا، چھلکا زرد، چکنا باریک گودے کیساتھ چمٹا ہوتا ہے۔ گودا شیریں ، رس دار اور گٹھلی لمبی اور موٹی ہوتی ہے۔ اصلاًمدراس کا آم ہے۔

گولا

یہ شکل میں گول ہوتا ہے۔ سائز درمیانہ، چھلکا گہرا نارنجی اور پتلا ہوتا ہے۔ گودا پیلا ہلکا ریشے دار اور رسیلا ہوتا ہے۔ گٹھلی بڑی ہوتی ہے۔

مالدا

یہ آم سائز میں بہت بڑا ہوتا ہے ، مگر گٹھلی انتہائی چھوٹی ہوتی ہے۔ چھلکا پیلا اور پتلا ہوتا ہے۔

نیلم

اس آم کا سائز درمیانہ اور چھلکا درمیانہ، موٹا اور پیلے رنگ کا چمکتا ہوا ہوتا ہے۔
سہارنی
سائز درمیانہ اور ذائقہ قدرے میٹھا ہوتا ہے۔
تمام پھل موسمی تقاضے پورا کرنے کی صلاحیتوں سے مالامال ہیں۔ چونکہ آم موسم گرما کا پھل ہے اور موسم گرما میں دھوپ میں باہر نکلنے سے لو لگ جاتی ہے ، لو لگنے کی صورت میں شدید بخار ہو جاتا ہے۔ اس لیے لو کے اثر کو ختم کرنے کے لئے کچا آم گرم راکھ میں دبا دیں۔ نرم ہونے پر نکال لیں۔ اس کا رس لے کر ٹھنڈے پانی میں چینی کے ساتھ ملا کر استعمال کرائیں۔ لو لگنے کی صورت میں تریاق کا کام دے گا۔ آم کے پتے ، چھال، گوند، پھل اور تخم سب دوا کے طور پر استعمال ہوتے ہیں۔ آم کے پرانے اچار کا تیل گنج کے مقام پر لگانے سے بالچر کو فائدہ ہو گا۔ آم کے درخت کی پتلی ڈالی کی لکڑی سے روزانہ مسواک کرنے سے منہ کی بدبو جاتی رہے گی۔ خشک آم کے بور کا سفوف روزانہ نہار منہ چینی کے ساتھ استعمال کرنا مرض جریان میں مفید ہے۔ جن لوگوں کو پیشاب رکنے کی شکایت ہو، آم کی جڑ کا چھلکا برگ شیشم دس دس گرام ایک کلو پانی میں جوش دیں۔ جب پانی تیسرا حصہ رہ جائے تو ٹھنڈا کر کے چینی ملا کر پی لیں۔ پیشاب کھل کر آئے گا۔ ذیابیطس کے مرض میں آم کے پتے جو خود بخود جھڑ کر گر جائیں ، سائے میں خشک کر کے سفوف بنا لیں۔ صبح و شام دو دو گرام پانی سے استعمال کرنے سے چند دنوں میں فائدہ ہوتا ہے۔ نکسیر کی صورت میں آم کے پھولوں کو سائے میں خشک کر کے سفوف بنا لیں اور بطور نسوار ناک میں لینے سے خون بند ہو جاتا ہے۔ جن لوگوں کے بال سفید ہوں ، آم کے پتے اور شاخیں خشک کر کے سفوف بنا لیں۔ روزانہ تین گرام یہ سفوف استعمال کیا کریں۔ کھانسی، دمہ اور سینے کے امراض میں مبتلا لوگ آم کے نرم تازہ پتوں کا جوشاندہ، ارنڈی کے درخت کی چھال ،سیاہ زیرے کے سفوف کے ساتھ استعمال کریں۔ آم کی چھال قابض ہوتی ہے اور اندرونی جھلیوں پر نمایاں اثر کرتی ہے ، اس لیے سیلان الرحم (لیکوریا)، آنتوں اور رحم کی ریزش، پیچش، خونی بواسیر کے لئے بہترین دوا خیال کی جاتی ہے۔ ان امراض میں آم کے درخت کی چھال کا سفوف یا تازہ چھال کا رس نکال کر اسے انڈے کی سفید ی یا گوند کے ساتھ دیا جاتا ہے۔ کیری کے چھلکے کو گھی میں تل کر شکر ملا کر کھانے سے کثرت حیض میں فائدہ ہوتا ہے۔ یہ چھلکا مقوی اور قابض ہوتا ہے۔ آم کی گٹھلی کی گری قابض ہوتی ہے۔ چونکہ اس میں بکثرت گیلک ایسڈ ہوتا ہے ، اس لئے پرانی پیچش، اسہال، بوا سیر اور لیکوریا میں مفید ہے۔ پیچش میں آنوؤں کو روکنے کے لئے گری کا سفوف دہی کے ساتھ دیا جاتا ہے۔ نکسیر بند کرنے کے لئے گری کا رس ناک میں ٹپکایا جاتا ہے۔

کچے اور پکے آم کے فائدے
پرنسپل غلام قادر ہراج، جھنگ

اچار ہمارے کھانوں کی لذت اور ذائقہ کو بڑھاتے ہیں۔ اچار اشتہا انگیز اور غذا ہضم کرنے میں مدد دیتے ہیں۔ یوں تو تمام تر پھلوں اور سبزیوں سے اعلیٰ قسم کا اچار تیار کیا جا سکتا ہے جن میں گاجر، گوبھی، شلجم، مولی، سبز مرچ، لیموں ، لسوڑا، کھیرا، ڈیلے ، سہانجنا، آملہ وغیرہ شامل ہیں لیکن جس چیز کا اچار سب سے زیادہ خوشذائقہ اور پسند کیاجاتا ہے وہ ہے آم کا اچار۔
اچار کی خوبیاں

اچھے اچار میں بیک وقت کھٹا، نمکین، میٹھا اور مصالحے دار ذائقے موجود ہونا چاہیے جبکہ اس میں دوسرے ذائقے خوشگوار حد تک پائے جاتے ہیں۔ اچھے اچار کو نرم اور خستہ ہونا چاہیے تاہم پھلوں اور سبزیوں کی رنگت تبدیل نہیں ہونی چاہئے۔

اچار بنانے کے لئے آم کا انتخاب

اچار بنانے کے لئے پوری طرح تیار اور کچے پکے آم استعمال نہیں کرنے چاہئیں۔ زیادہ پکے ہوئے اور نرم آم اچار کے لئے غیر موزوں ہیں جس سے اچار لیس دار ہو جاتا ہے اور فوراً خراب ہو جاتا ہے۔

کچے آم کا انتخاب کرتے وقت ایسے پھل کا انتخاب کرنا چاہیے جو 10 ہفتے کا ہو۔ 6 ہفتے کا پھل استعمال کرنے سے اچار سخت ہو جاتا ہے اور ذائقہ بھی مناسب نہیں ہوتا۔ آم کا وزن اندازاً 250 گرام تک ہونا چاہیے۔
احتیاطی تدابیر

آم کا اچار بنانے کے لئے آم کو نمک والے پانی سے اچھی طرح دھو کر گرد و غبار اور مٹی کو دور کر لینا چاہیے۔ آم کی قاشوں کو کاٹ کر دھونے سے تیزابیت میں کمی واقع ہو جاتی ہے اور ضر ر رساں جراثیم کی تعداد میں اضافہ ہو جاتا ہے اس لیے آم کو کاٹنے سے پہلے ہی دھو کر خشک کر لینا چاہیے۔

مناسب طریقہ سے پھانکوں میں کاٹ لیں۔ ٭ کٹے ہوئے آم میں ایک نمک کی تہہ لگائیں تاکہ وافر پانی خارج ہو جائے۔ قاشیں جتنی چھوٹی ہونگی نمک ان میں آسانی سے پہنچ جائیگا۔ ٭ آم کو زیادہ دیر تک ابالنے سے اچار نرم پڑ جاتا ہے صرف خامروں کو زائل کرنے کے لئے تین سے چار منٹ تک ابالیں۔ ٭ اگر اچار نرم پڑ جائے تو ایسی صورت میں کیلشیم کلورائیڈ چوتھائی گرام فی کلو کے حساب سے استعمال کریں۔ اچار میں پھٹکڑی کا استعمال خطرے سے خالی نہیں اس کو استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ ٭ اچار بنانے کے لئے مٹی، پلاسٹک یا شیشے کا برتن استعمال کرنا چاہیے۔ ٭ لوہے کا چمچہ اچار میں استعمال کرنے سے اچار زنگ آلود ہو جاتا ہے اور کالا پڑ جاتا ہے۔ اچار ہلانے کے لئے لکڑی کا چمچہ بہتر ہے۔ ٭ نمک، سرکہ اور گڑ زیادہ استعمال کرنے سے اچار میں جھریاں پڑ جاتی ہیں اور وہ سخت ہو جاتا ہے۔ بہت کم نمک استعمال کرنے سے اچار بدبو بھی چھوڑ سکتا ہے۔
درج ذیل بیماریوں میں اچار کا استعمال مضر ہے

بلغم، گرمی، جریان، احتلام، زکام اور ایام مخصوصہ میں بے قاعدگیاں ان امراض میں اچار کا استعمال ہرگز نہیں کرنا چاہیے

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
URDU :name Aam, Amb
ARABIC name: Manja, Manga, Mangô, Mangu
HINDI name: Ama, Am
Scientific nam: Mangifera indica
English name: Mango
Common name:mango
Dutch name:Manga : Mango
Spanish name :Mango
French name :Fruit du manguier Mangue Manguier
German name:Mango Mangobaum Mangofrucht
Italian name: Mango

continue reading…

anar dana

انار کے بیج کے فوائد

اردونام اناردانہ،عربی نام حب الرمان، فارسی نام تخم انار, اناردانہ ،انگریزی نام پومی گرانٹ سیڈز
عام کھٹے کچے اناروں کو خشک کر لیا جاتا ہے ۔
رنگ ۔سفید اور سرخ۔
ذائقہ ۔تُرش مزاج سردو خشک ۔
فوائد ۔قابض ہے معدہ کو قوت دیتا ہے کھانے کو ہضم کرتے ہیں ، بھوک بڑھاتے ہیں انار دانہ پاؤڈر1 گرام، کو پانی کے ساتھ کھانے سے اسہال و پیچش کو آرام ملتا ہے مزید پودینہ دھنیا ہری مرچ انار دانہ کی چٹنی بھی بنا کر استعمال کی جاتی ہے اس سے معدہ کھانے کو جلد ہضم کرتا ہے تیزابیت معدہ اور بدہضمی میں بھی مفید ہے
انار دانہ کی چٹنی بنا نے کا طریقہ
اناردانہ: 10گرام ، سرخ مرچ، نمک : حسب ضرورت ہرا دھنیا: آدھی گٹھی
اناردانہ دھو کر صاف کر لیں اور کونڈی میں رگڑ کر باریک پیس لیں۔ جب خوب باریک ہو جائے تو اس میں نمک، سرخ مرچ ملا کر پیس لیں، پھر دھنیا دھو کر صاف کر کے کاٹ کر اس میں ڈال دیں اور پودینہ کے پتے بھی ڈال دیں۔ سب کو ملا کر خوب پیس کر اتار لیں۔ تھوڑا پانی ملا کر چٹنی کی شکل ٹھیک کر لیں اور کھانے کے ساتھ کھائیں
انار دانہ سے امراض معدہ کے لیے بہترین چورن ،پھکی
معدہ کے اکثر امراض ميں مفيد و فائدہ مند ہے کھانے کو ہضم کرتی ہے اورکھٹے میٹھے ڈکاروں اور گیس سے نجات ملتی ہے
اجزاء:زنجبيل 5 گرام، زيرہ سفيد 5 گرام، زيرہ سياہ 5 گرام ،فلفل دراز 5 گرام، الائچي خرد 5 گرام،ست ليموں 5 گرام,فلفل سياہ 10 گرام، انار دانہ 10 گرام، ست پودينہ 2 گرام، نمک لاہوري 40 گرام،مصري 150 گرام,ترکيب تياري: ست پودينہ اور ست ليموں کے علاوہ تمام ادويہ کو کوٹ پيس چھان کر ست پودينہ و ست ليموں باريک کر کے ملائيں
مقدار خوراک: 2 گرام کھانے کے آدھ گھنٹہ بعد ایک گلاس تازہ پانی کیساتھ استعمال کریں
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

Urdu Name : Anar dana
Arabic Name : Rummaan (Fruit), Jullanar (Flower), Habb al-rummaan (Seeds
Bengali Name : Dadima (Fuit), Dalim (Seeds
Chinese Name : Shi liu, Shi liu pi (Rind
English Name : Pomegranate seeds
French Name : Grenade
German Name : Granatapfelbaum, Granatbaum
Gujarati Name : Dadam (Seeds
Hindi Name : Anar,Fresh Fruit, Anardana,Seeds, Gulnar,Flower
Kannada Name : Dalimba (Fruit), Dalimbari (Seeds
Kashmiri Name : Dan (Fruit), Danposh (Flower), Da’en Fol (Seeds), Da’en Del (Rind
Latin name : Punica granatum Linn.
Marathi Name : Dadimba (Fruit), Dalim (Seeds
Persian Name : Anar (Fruit), Anardana (Seeds
Punjabi Name : Anar dana
Sanskrit Name : Kuchaphala, Dadima, Lohitapushpa,Fruit, Bijapura, Dantabija ,Seeds

Health Benefits of Pomegranate Seeds

continue reading…

basen-ladoo22

نسخہ،مقوی دماغ، لڈو

نسخہ الشفاء ۔ ناریل 250گرام، دیسی شکر750گرام، مغز بادام250گرام،مغز اخروٹ 200گرام
خالص دیسی گھی 750گرام
ترکیب تیاری: تمام مغزیات کو موٹا موٹا کوٹ‌ کراسمیں شکر ملادیں  اسکے بعد خالص
دیسی گھی کو گرم کر کے ملا دیں اور پھر سے اچھی طرح مکس کرکے 50،50گرام
کے ہاتھ سے لڈو بنا کر رکھ لیں
طریقہ استعمال۔صبح نہار منہ روزانہ ایک لڈو کھائیں اور بعد میں ایک کپ نیم گرم دودھ کا پیئں
فوائد۔جس آدمی کا سر چکراتا ہو نزلہ زکام کی زیادہ شکایت ہو اس کے لئے انتہائی مفید ہے
مزید جسم کو فربہ اور ٹھوس بناتا ہے اور نظر کی کمزوری بھی ختم کرتا ہے
نوٹ یہ نسخہ استعمال کرنے کی کوئی مدت نہیں ہے عرصہ دراز بھی استعمال کر سکتے ہیں
کم از کم ایک سے تین ماہ لازمی استعمال کریں

نسخہ، پیشاب کھل کر نہ آنا قطرے قطرے آنا

نسخہ، پیشاب کھل کر نہ آنا قطرے قطرے آنا
نسخہ الشفاء،جڑ پان 10گرام،گل نیلوفر10گرام،چھوٹی آلائچی5گرام
ترکیب تیاری،اجزاء کو ہلکا ہلکا سا کوٹ لیں
طریقہ استعمال،چائے والے چمچ کا تیسرا حصہ دو کپ پانی میں ڈال کر
پکائیں ایک کپ رہ جانے پر حسب ذائقہ چینی ملا لیں یاں پھیکا پی لیں
صبح دوپہر رات کھانے کے ایک گھنٹہ بعد دس سے پندرہ یوم
استعمال کریں انشاء اللھ شفاء ہوگی
فوائد،پیشاب کا کھل کر نہ آنا پیشاب کرنے کے بعد پیشاب کے قطر ے قطرے
نکلنا کو ختم کرتا ہے اور بیشاب کھل کر آتا ہے
یہ نسخہ خاص کر نمازیوں کے لیے بہترین ہے کپڑے پاک صاف رہیں گے
اور وضو قائم رہے گا

امساک کی گولیاں

امساک کی گولیاں
نسخہ الشفاء, ۔کافور10گرام ،اجوائن خراسانی 10،گرام،مغزجاعفل10گرام سمندرپھل 15گرام
سلاجیت 4 گرام ،سب کو باریک پیس کرسفوف بنا لیں پھر ہلکا سا شہد ملا کر
کالے چنے کے برابر گولیاں بنا لیں ۔
ترکیب استعمال۔ ہم بستری سے دو گھنٹے قبل خالی پیٹ 2 گولیاں آدھا کلو گرم دودھ سے لیں
فوائد: یہ گولیاں بہترین امساک پیدا کرتی ہیں اور خوب لطف حاصل ہوتا ہے
نوٹ؟ یاد رہے کہ امساک پیدا کرنے والی ادویات کا مسلسل استعمال نہیں کرنا چاہیے ایسی
ادویات کا مسلسل استعمال درست نہیں ہوتا مسلسل استعمال اپنا اثر کرنا چھوڑ دیتا ہے
پکا مکمل مسقل علاج کروانا چاہیے ضروری ہے

majon

پٹی برائے قوت باہ و مجلوق
نسخہ الشفاء, لونگ 9 عدد ،دارچینی 12 گرام،زعفران 10 گرام،ان سب کو باریک سفوف
بناکر روغن تل 7 چمچ بڑے کھانے والے ملاکر خوب کھول کرکے باریک کرلیں معجون
سی بن جائے گی
ترکیب استعمال ,اس میں سے ایک چمچ دوا لیکر اسکا کوباریک کپڑے پرلیپ کریں کاٹن
کا کپڑا ہوناچاہیے جو تین انچ چوڑا اورلمبائی بھی تین انچ ہونی چاہیے اس پرلیپ کرکے
رات سوتے وقت عضو خاص پراچھی طرح لپیٹ کر اورانڈر ویئر پہن کرسوجائیں اور
صبح کو اُٹھ کر تازہ پانی سے دھولیں اسی طرح ایک دن چھوڑ کر پندرہ یوم استعمال کریں
فوائد:جلق یا اغلام سے اگر عضو مخصوص میں کمزوری اور ٹیڑھا پن واقع ہوگیا ہو تو
اس پٹی کے استعمال سے دور ہو جائے گا اور عضو مخصوص میں قوت پیدا ہوجائے گی

iاعصاب کو طاقت دینے والا حلوہ

اعصاب کو طاقت دینے والا حلوہ
نسخہ الشفاء۔ میدہ گندم 50 گرام ، مغز کدو 50 گرام، مغز تربوز 10 گرام، گوند کیکر 10 گرام
خالص دیسی گھی 250 گرام ، چینی50گرام۔
ترکیب تیاری ۔ میدہ کو دیسی گھی میں آہستہ آہستہ ہلکی آنچ پر بھونیں جب رنگ سرخ ہو
جائے تو اس کو اتار کر رکھ دیں پھر تمام مغزیات کو کوٹ پیس کر بھونے ہوئے میدے میں ڈال
دیں پھرچینی کا تھوڑے پانی میں شیرہ بنا کرڈالدیں پھراس اسکو ہلکی آنچ پر2 منٹ تک بھونیں
اب تیار ہے ۔ حلوہ کی طرح بن جائے گا
مقدار خوراک ۔ایک بڑا چمچ کھانے والا صبح و شام خالی پیٹ ایک تا دو گلاس
نیم گرم دودھ سے کھائیں
فوائد،یہ حلوہ اعصاب اورجسم کے تمام پٹھوں کوطاقت دیتا ہےجوڑوں کی درد کو بھی ختم کرتا
ہے ,,,,, نوٹ ?اس نسخہ کو ایک ماہ تک استعمال کر سکتے ہیں

alshifa

نسخہ،پیٹ کے امراض کے لیے
نسخہ الشفاء ۔جو کھار 20 گرام ، سہاگہ کھل کیا ہوا 20 گرام ، الائچی بڑی 40 گرام
ترکیب تیاری ۔سب کو کوٹ چھان کر باریک سفوف تیار کر لیں
مقدارخوراک ۔2گرام صبح،دوپہر،رات،کھانے کے ایک گھنٹہ بعد تازہ
پانی کیساتھ استعمال کریں پندرہ یوم تک
فوائد ۔پیٹ میں مروڑ ،گیس کی زیادتی سوزش گردہ اور مشانہ کے لئے مفید ہے

Copy Protected by Tech Tips's CopyProtect Wordpress Blogs.